Uncategorized

Junaid Jamshed 2nd Semester Student of Computer Science and Hafiz E Quran Committed Suicide

نام: جنید جمشید
عمر: ذیادہ سے ذیادہ 19 سال
یو ای ٹی پشاور۔
کمپیوٹر سائنس ( سیکنڈ سمسٹر)
حافظ قرآن۔
اخر کب تک، اس باغ کا ایک اور پھول مرجھا گیا۔ پچھلے ایک دو مہینوں میں صرف میں نے کم از کم ایسے بیس واقعات دیکھے ہیں، جن میں سٹوڈنٹ گھریلو یا تعلیمی پریشر کو برداشت نہ کرتے ہوئے، خودکشی کے لیے مجبور ہو جاتے ہیں۔ ہمارا تعلیمی نظام اور ہمارے گھریلو تربیت اس کے ذمہ دار ہے۔ اساتذہ اور والدین ان کے قاتل ہیں۔
استاد محترم کو کلاس میں کوئی ایک بچہ اچھا نہیں لگتا، اور اوپر سے نظام ایسا ہے کہ اس کی ہاتھ میں سمسٹر کی تیز دھار چھری ہے اور سٹوڈنٹ کا جھکا ہوا سر۔
اب باپ کو بس ایک چیز چاہیے اچھے نمبر، نہ آئے تو طعنے شروع ہو جاتے ہیں کہ میں پیسے لگا رہا ہوں۔
اس عمر میں بچہ شائد مار تو برداشت کر لے لیکن جوانی کے اس حصے میں کسی اپنے کے طعنے برداشت نہیں ہوتے۔
سب سے زیادہ قصور وار میں تعلیمی نظام کے بعد والدین کو ٹھہراؤ گا، انھوں نے بچوں کو ایسے حالات سے نبرد آزما ہونا نہیں سکھایا ہوتا، انھوں نے بچے کو ایک ڈر کے سوا کچھ نہیں دیا ہوتا۔ انھوں نے کبھی بچے کو سننا گوارا نہیں کیا ہوتا، یقین مانو یہ واقعات مکمل ختم ہو جائیں گے اگر بچوں کو یہ احساس دلایا جائے کہ زندگی کی کس ایک موڑ پر ناکامی کا مطلب زندگی ختم ہونا نہیں ہے۔ اگر والدین بچوں کو باور کرائے کہ میں ہٹلر جیسا باپ اپ کے ساتھ شرارتیں کرنے والا دوست ہوں تو بچوں کے ہر مسئلے کا حل آسانی سے ڈھونڈنا جا سکتا ہے، اس سے پہلے کہ وہ غیروں کے محفلوں میں اپنے مسائل کا حل تلاش کرنے لگے جہاں صرف مایوسی ہی ان کا مقدر بنیں گی۔
لڑکے تو پھر بھی تعلیمی نظام کی اس بے انصافی کا کوئی نہ کوئی حل نکال لیتے ہیں لیکن مجبور لڑکیوں کی عزت کا تو روز جنازہ نکلتا ہے ان نام نہاد تعلیمی اداروں میں، اواز نہیں اٹھا سکتی، ایک تو ہمارا یہ معاشرہ اسی کو ہی قصوروار سمجھیں گا اور دوسرا والدین کو تو بس ڈگری چاہیے،انھوں نے پیسے جو انسوٹ کی ہے۔
جنید بھی شاید میرے جیسے کسی پسماندہ علاقے سے تھا، ورنہ بیوروکریٹس کو پتہ ہوتا ہے کہ بچے کو کیسے بیوکریٹ بنانا ہے، سیاستدان کو معلوم ہوتا ہے بچے کو کیسے ایک کامیاب سیاست دان بنانا ہے، بس ایک غریب کو بیٹے کو انجینیر ی ڈاکٹر ہی بنانا ہے اب چاہے وہ مرے یا جیے۔

Junaid Jmahsed 2nd Semester student of Computer Science UET Peshawar and Hafiz E Quran committed suicide

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Close
Close